کامیابی کا لیے جنونی ہو جاؤ

دنیا ان لوگوں کو یاد نہیں رکھتی جو تاریخ یاد کرتے ہیں. دنیا انہیں یاد رکھتی ہے جو تاریخ بناتے ہیں.

خواب دیکھنے والوں کو نہیں انہیں پورا کرنے والوں کو یاد کیا جاتا ہے. انہیں یاد کیا جاتا ہے. جو مشکلوں کے سامنے جھکتے نہیں. جو ناکامیوں کی وجہ سے رکتے نہیں.

جو بڑی بڑی باتیں نہیں بڑے بڑے کام کر کے دکھاتے ہیں. جو منزلوں کا راستہ نہیں ڈھونڈتے. نئی منزلیں بناتے ہیں.

جو ناکامیوں کے ساتھ ضد لگا لیتے ہیں.

ناکامی جنہیں ہرا نہیں پاتی.

گرا نہیں دنیا میں کوئی ایسا انسان نہیں ہے جس کی بڑی بڑی خواہشیں نہ ہوں بڑے بڑے خواب نہ ہوں لیکن ہر انسان اپنے خوابوں کو پورا نہیں کر پاتا کیونکہ وہ ان پر کام نہیں کرتا دو سال کی عمر میں اس کی فیملی کو اپنا گھر چھوڑنا پڑا. گھر چھوڑنے کی وجہ سے وہ سکول بھی نہیں جا پایا.

نو سال کی عمر میں اس کی ماں گزر گئی.

گھر میں غربت بہت تھی. اس نے کئی نوکریاں کیں. لیکن کسی میں بھی کامیابی نہیں ملی. حالات اس کے بالکل خلاف تھے.

اکیس سال کی عمر میں اس نے خود کا بزنس شروع کیا. لیکن فلاپ ہو گیا.

بائیس کی عمر میں election لڑا اور ہار گیا چوبیس سال کی عمر میں پھر business شروع کیا پھر فلاپ ہو گیا چھبیس سال کی عمر میں اس کی بیوی جس سے وہ بہت پیار کرتا تھا اس کی ڈیتھ ہو گئی اتنے برے دن دیکھنے کے بعد دکھوں اور پریشانیوں کی وجہ سے ستائیس سال کی عمر میں وہ depression میں چلا گیا ذہنی مریض بن گیا وہ اپنے پاس کوئی چاقو یا چھری بھی نہیں رکھتا تھا کہ کہیں خود مار نہ ڈالے چونتیس سال کی عمر میں کانگریس سے election لڑا ہار گیا

پینتالیس سال کی عمر میں cents کا election لڑا وہ بھی ہار گیا سینتالیس سال کی عمر میں voice president کا election لڑا وہ بھی ہار گیا forty nine years کی عمر میں پھر cents کا election لڑا پھر ہار گیا لیکن وہ اتنا پاگل اور ضدی تھا کہ وہ election تو ہارتا تھا لیکن ہارنے مانتا تھا باون سال کی عمر میں اٹھارہ سو سات میں امریکہ کے president کا election لڑا اور جیت کر امریکہ کا سولہواں صدر بن گیا اس بندے کا نام ہے ابراہم لنکن جس سے ہار نے بھی ہار مان لی اس نے پوری دنیا کو یہ سکھایا کہ تم کتنی بار بھی کیوں نہ ہارو لیکن اگر تم ہمت نہیں ہارو گے اگر تم نے کوئی پالی ہوئی ہوگی تو تم ایک دن ضرور جیتو گے دوستوں اس دنیا میں کوئی ایسا شخص نہیں ہے

جس کو کبھی ریجیکشنز کا سامنا نہ کرنا پڑا ہو تھامس ایڈیسن جیکبا جے کے رولنگ ہسٹری ایسے بے شمار ناموں سے بھری ہوئی ہے اور یہی کئی بار ریجیکٹ ہونے والے لوگ آج دنیا کے کامیاب ترین لوگ ہیں آج اگر لوگوں کو کچھ یاد ہے تو ان کی ان کے ساتھ کئی اور لوگ بھی ہوں گے جو ان کے ساتھ ہی ناکام ہوئے ہوں گے اور انہوں نے ہار مان لی ہو گی کوئی کر دیا ہو گا آج دنیا میں ان کا نام لینے والا کوئی نہیں آج ہم انہی کو جانتے ہیں جنہوں نے اس وقت ہار ماننے سے انکار کر دیا تھا کیونکہ دنیا انہیں یاد نہیں رکھتی جو تاریخ پڑھتے ہیں دنیا انہیں یاد رکھتی ہے جو تاریخ دوستوں ہمیشہ یاد رکھنا ہر کامیابی کا سفر ہمیشہ ریجیکشن سے ہی شروع ہوتا ہے ریجیکشن کا یہ مطلب نہیں کہ تم ہار چکے ہو ریجیکشن کا مطلب یہ ہے کہ تمہیں ایک بار اور کوشش کرنی ہے اور زندگی میں ہر روز کچھ نیا سیکھو نیا سوچو نیا کرو learn کرو

Scroll to Top