جس گھر میں رات کو سونے سے پہلے یہ ایک سورت پڑھی جاتی ہے وہاں رزق کے فرشتے بوریاں بھر بھر کر لے کے آتے ہیں

جس گھر میں رات کو سونے سے پہلے یہ ایک سورت پڑھی جاتی ہے وہاں رزق کے فرشتے بوریاں بھر بھر کر لے کے آتے ہیں آج کی اس پوسٹ کے اندر جو آپ کے سامنے میں سورت پیش کرنے جا رہا ہوں جیسے میں نے آپ کو بتلایا اس کے بارے میں ہمارے آخری پیغمبر حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جو ہر رات یہ سورت پڑھے اس پر کبھی غربت نہیں آئے گی.

اور ایک اور حدیث کے اندر آپ علیہ الصلوۃ والسلام نے ارشاد فرمایا کہ یہ سورت دولت کی صورت ہے. تو لہذا ہمیں چاہیے کہ اسے پڑھ کر اپنے بچوں کو بھی پڑھائیں. اور جیسا کہ حدیث سے یہ بات واضح ہو گئی ہے کہ یہ سورت پوری امت مسلمہ کے لیے ایک نعمت ہے. اور آج جیسا کہ آپ کو معلوم ہے کہ ہم جیسا کہ حالات چل رہے ہیں اور ایک عالمی وبا ہے.

جس سے اللہ تعالی ہم سب کو محفوظ رکھے. اس کی وجہ سے عدم کے سب ہوئے ہوئے ہیں جو جن کا کاروبار اچھا بھی تھا سب کچھ تھا سب پریشان ہوئے ہوئے ہیں ہر گھر کے اندر رزق کی مال کی تنگی ہے تو ہمیں چاہیے کہ یہ صورت جو کہ ہمیں غربت سے بچاتی ہے اس کو ہر رات میں ایک مرتبہ ضرور پڑھیں تو کون سی صورت ہے جس گھر میں رات کو سے پہلے یہ ایک سورت پڑھی جاتی ہے.

وہاں رزق کے فرشتے بوریاں بھر بھر کر رزق لاتے ہیں. اگر یقین نہیں آتا تو آپ اس عمل کو کر کے دیکھ لیں. کیونکہ ہمارے پیارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی بات عرف آخر ہے. پتھر پہ لکیر ہے یعنی جو فرما دیا وہ ہو کر رہنا ہے. تو اس سورت کے بہت زیادہ فضائل اور برکات ہیں. اس سورت کی برکت سے گھر سے رزق کی بردشت اور کمی ختم ہو جاتی جتنی بھی بندشیں ہوں گی چاہے رزق کی ہوں یا جس بھی حوالے سے ہوں وہ تمام انشاءاللہ العزیز اللہ تعالیٰ کے حکم سے ختم ہو جائیں گی ہر قسم کا مالی مسئلہ حل ہو جاتا ہے کسی بھی قسم کا ہو کاروباری ہے گھریلو ہے یا کسی بھی حوالے سے دکان کے حوالے سے مسئلہ ہے کسی بھی حوالے سے مالی مسئلہ ہوگا انشاءاللہ العزیز حل ہو جائے گا اس لیے روز یہ سورت پڑھ لیا کریں کون سی سورت ہے یہ آپ کی سکرین کے اوپر آ رہی ہے سورۃ واقعہ ٹھیک ہے سورۃ واقعہ پارہ نمبر ٹوئنٹی سیون مغرب کے روز ایک مرتبہ پڑھ لیں.

اور ایک روایت کے اندر ہے جیسے میں نے آپ کے سامنے پیش کر رہا ہوں. کہ جس گھر میں یہ سورت پڑھی جاتی ہے. تو لہذا صحابہ کرام رضوان اللہ تعالی علیہم اجمعین کا طریقہ کار تھا کہ خاص طور پر اپنی بچیوں کو یہ سورت لازمی یاد کراتے تھے. اور فرماتے تھے کہ جب تک یہ سورت پڑھتی رہیں گی ان کو کبھی گھر میں فاقہ نہیں آئے گا.

تو آج کل کے جیسے حالات ہیں ہر شخص اس وجہ سے پریشان ہیں رزق کی تنگی کی وجہ سے کاروبار کی وجہ سے تو ہمیں چاہیے کہ ہم بھی اپنے اس چیز کا معمول بنا لیں انشاء اللہ العزیز گھر کے اندر رزق اور مال کی بہتات ہو جائے گی اور اللہ تعالی اتنا عطا فرما دیں گے کہ پھر کسی چیز کی کمی نہیں رہے گی

Scroll to Top